جماعةالدعوة پاکستان کے مرکزی رہنما خالد بشیرشہید

Khalid Bashir File Photo

لاہور(      )

جماعةالدعوة پاکستان کے مرکزی رہنما خالد بشیر کو شہید کر دیا گیا ہے۔ دو دن قبل نامعلوم افراد نے انہیں ہجویری ٹاﺅن کے علاقہ سے اغواءکیا تھا ۔ خالد بشیرکی نماز جنازہ آج صبح سات بجے ہجویری ٹاﺅن میں ادا کی جائے گی۔ نماز جنازہ امیر جماعةالدعوةپروفیسر حافظ محمد سعید پڑھائیں گے۔ خالد بشیرگذشتہ بیس سال سے جماعةالدعوة سے وابستہ تھے،ان کی شہادت کی خبر سن کر جماعةالدعوة کے رہنماﺅں اور کارکنان
کی بڑی تعداد ان کی رہائش گاہ ہجویری ٹاﺅن پہنچ گئی۔ جماعةالدعوة کے شہید رہنما نے پسماندگان میں بیوہ، تین بیٹیاں اور چار بیٹے حیات چھوڑے ہیں۔ امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید، حافظ عبدالسلام بن محمد،حافظ عبدالرحمن مکی،حافظ عبدالغفار المدنی، مولانا امیر حمزہ،حافظ سیف اللہ منصور، مولانا سیف اللہ خالد، حاجی نذیر احمد، محمد یحییٰ مجاہد، مولانا ابو الہاشم، حافظ خالد ولید و دیگر نے خالد بشیر کے اغواءکے بعد شہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے اور ان کے لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی ہے ۔امیر جماعةالدعوة حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ خالد بشیر جماعت کے انتہائی متحرک رکن تھے جو طویل عرصہ سے جماعت کے ساتھ مل کر دین کی تبلیغ کا فریضہ سرانجام دے رہے تھے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو چاہیے کہ وہ اس واقعہ کی اعلیٰ سطحی پیمانے پر تحقیقات کریں اور قاتلوں کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے تاکہ آئندہ کیلئے ایسے واقعات کی روک تھام کی جاسکے۔خالد بشیر کے اغواءکا مقدمہ تھانہ ہربنس پورہ میں درج کیا گیاتھا۔ 

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s