جماعةالدعوة کے رضاکار ملک بھر کے سیلاب متاثرہ ہر شہر و علاقے میں امدادی سرگرمیاں بھرپور انداز میں جاری رکھے ہوئے ہیں۔ حافظ محمد سعید

 

 

 

HS FIFs

جماعةالدعوة پاکستان کی طرف سے سیلاب متاثرین میں خشک راشن اور سلائی مشینوں کی تقسیم کے سلسلہ میں رانا ٹاﺅن میں ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسرحافظ محمد سعید، مولانا ابو الہاشم، محمد یحییٰ مجاہد و دیگر رہنماﺅںنے شرکت کی اور سینکڑوں متاثرین میں ایک ماہ کا خشک راشن اور بیوہ اور نادار خواتین میں سلائی مشینیں تقسیم کی گئیں۔ اس موقع پرایک بڑے میڈیکل کیمپ کا بھی انعقاد کیا گیاجس میں ماہر ڈاکٹرز نے سینکڑوں مریضوں کا طبی معائنہ کیا اور ان میں مفت ادویات تقسیم کی گئیں۔ جماعةالدعوة کی طرف سے گذشتہ روز تقریب کے دوران سینکڑوں خاندانوں میں ایک ماہ کا خشک راشن تقسیم کیا گیا ۔ سیلاب متاثرین کیلئے خصوصی طور پر تیار کردہ راشن پیک میں آٹا، چاول، گھی، چینی، دالیں و دیگر اشیاءشامل ہیں۔ امیر جماعةالدعوة حافظ محمد سعید نے اپنے دورہ کے دوران سیلاب متاثرین سے ملاقاتیں کر کے ان کے مسائل سے آگاہی حاصل کی، ایف آئی ایف اور جماعةالدعوة کی ریلیف سرگرمیوں کا جائزہ لیا اور امدادی کاموں کو مزید منظم کرنے کی ہدایا ت جاری کیں۔حافظ محمد سعید نے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ جماعةالدعوة کے رضاکار ملک بھر کے سیلاب متاثرہ ہر شہر و علاقے میں امدادی سرگرمیاں بھرپور انداز میں جاری رکھے ہوئے ہیں۔جن علاقوں میں پانی اتر چکا ہے وہاں متاثرین کی بحالی کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔ سیالکوٹ، گوجرانوالہ اور کامونکی میں متاثرین کیلئے گھروں کی تعمیرکا آغاز کر دیا گیا ہے۔ دوسرے سیلاب زدہ علاقوں میں بھی متاثرین کو گھر بناکر دیے جائیں گے۔

انہوںنے کہاکہ جماعةالدعوة کے رضاکاروں نے سندھ کے سیلاب متاثرہ علاقوں میں بھی امدادی سرگرمیوںکا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔ہزاروں افراد کو موٹر بوٹس کے ذریعہ اب تک محفوظ مقاما ت پر منتقل کیا گیاہے۔اسی طرح سیلاب متاثرہ علاقوں میں پکی پکائی خوراک اور خشک راشن کی تقسیم کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ انہوںنے کہاکہ بھارتی آبی جارحیت سے امسال لاکھوں ایکڑ پر کھڑی فصلیں تباہ ہوئی ہیں جس سے کسان و زمیندار اپنی جمع پونجی سے محروم ہو کر رہ گئے ہیں لیکن افسوسناک امر یہ ہے کہ حکمرانوں کی جانب سے بھارتی آبی دہشت گردی کے خلاف کوئی آواز بلند نہیں کی جارہی۔ وہ ایک طرف پاکستانی دریاﺅں پر غیر قانونی ڈیم بناکراپنی بنجر زمینوں کو سیراب کر رہا ہے۔ہمارے ہی دریاﺅں سے بجلی پیدا کر کے پاکستان کو فروخت کرنے کے منصوبے بنا رہا ہے اوردوسری طرف بارشوں کے دوران ڈیموں میں ذخیرہ کیا گیا پانی چھو ڑ کر ہمارے لہلہاتے ہوئے کھیت کھلیان برباد کر رہا ہے۔ اس صورتحال پر پاکستانی حکمرانوں کو کسی صورت خاموش نہیں رہنا چاہیے بلکہ بھارتی آبی جارحیت روکنے کیلئے ہر آپشن کھلا رکھنا چاہیے۔ انہوںنے کہاکہ بھارت کو پاکستانی دریاﺅں پر ڈیموں کی تعمیر سے نہ روکا گیا تو آنے والے دنوں میں اور زیادہ سنگین صورتحال کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ان حالات میں کہ جب لاکھوں پاکستانی سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں پوری پاکستانی قوم کو بڑھ چڑھ کر ان کی مدد کرنی چاہیے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s