ہندوستان اگر امن مذاکرات نہیں کرنا چاہتا تو بزور بازو اپنی ریاستیں چھین لیں گے۔ نواب آف جونا گڑھ

Junaghar

کراچی( ) جونا گڑھ کی عوام میں بیداری کی لہر پیدا ہو چکی ہے۔ ہندوستان اگر امن مذاکرات نہیں کرنا چاہتا تو بزور بازو اپنی ریاستیں چھین لیں گے۔ ہندوستان ہر دور میں پاکستان کا دشمن رہا ہے ۔ پاکستان میں خانہ جنگی پیدا کر کے پاکستان کی ریاستوں پر اپنا تسلط قائم رکھنا چاہتا ہے۔ کراچی وبلوچستان سمیت پورے پاکستان میں دہشت گردی میں بھارت ملوث ہے۔پاکستان اپنے بھائیوں مسلم برادری کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔ یہ وقت خالی کھوکھلے نعروں اور جلسوں کا نہیں بلکہ میدانوں میں عملی اقدامات کرنے ہوں گے۔ا ن خیالات کا اظہار نواب آف جونا گڑھ جہانگیر خانجی، جماعة الدعوة کراچی کے امیر انجینئر نوید قمر، صدر جونا گڑھ مسلم اسٹیٹ فیڈریشن اقبال ساندھ، جماعت اسلامی کے مرکزی رہنماءمحمد حسین محنتی، سنی اتحاد کونسل کے حاجی حنیف طیب ، انجمن نوجوانان اسلام کے طارق محمود، جنرل سیکریٹری جونا گڑھ مسلم اسٹیٹ فیڈریشن عبدالعزیز عرب و دیگر نے 15ستمبر کو یوم الحاق جونا گڑھ کی مناسبت سے منعقدہ جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جلسے میں جونا گڑھ کی مختلف جماعتوں و برادریوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

نواب آف جونا گڑھ مہابت خانجی کے پوتے جہانگیر خانجی نے اپنے خطاب میں کہا کہ جونا گڑھ کی تاریخ بہت پرانی ہے۔ اس کے لیے ضروری ہے کہ کوئی اہم یادگار بنائی جائے۔ اس وقت بھارت سے جونا گڑھ کے حوالے سے بات کرنا ضروری ہے۔ مجھے پاکستان میں کسی عہدے کی ضرورت نہیں ۔ اپنی زندگی میں جونا گڑھ کی ریاست کو آزادی پاکستان کا حصہ دیکھنا چاہتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے خلاف سازشیں کی جا رہی ہیں جن کو مل کر ناکام بنائیں گے۔ ہم پاکستان کوخوشحال اور پر امن دیکھنا چاہتے ہیں۔ انجینئر نوید قمر نے کہا کہ بھارت ہر سال اپنے ڈیموں کے دہانے کھول کر پاکستان میں سیلاب کی صورتحال پیدا کر دیتا ہے دوسری جانب وہ پاکستان کے پانیوں پر قبضے کر کے بجلی اور آباشی کے فوائد اٹھا رہا ہے۔ بھارت سے کسی خیر کی امید نہیں رکھی جا سکتی ۔ 16لاکھ گجراتی مسلمانوں کے قاتل نریندری مودی کووزارت عظمیٰ کی پیش کش، بھارت کی مسلم دشمن کی واضح مثال ہے۔ پاکستان مدینہ ثانی ہے یہاں کے مہاجروں کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اپنے آبائی علاقے دوبارہ حاصل کر لیں۔ جہاد کے ذریعے جوناگڑھ، مناوا، کشمیر ، برما اور دیگر مقبوضہ ریاستوں کو آزاد کروائیں گے۔ امریکہ اور نیٹو کے انخلاءکے بعد بھارت بری طرح پھنس چکا ہے۔ کشمیر کی آزادی کے بعد پورا ہندوستان آزاد ہو گا۔ وہ وقت بہت جلد دیکھیں گے جب 15ستمبر ہم بھارت میں منائیں گے۔اقبال ساندھ نے اپنے خطاب میں کہا کہ جوناگڑھ مسلم اسٹیٹ فیڈریشن کی جدوجہد سے آج سماجی و سیاسی حلقوں میں جوناگڑھ کی بات ہو رہی ہے۔ جب تک ہم خود نہیں اٹھیں گے جونا گڑھ کی آزادی کے لیے ایوانوں میں آواز نہیں جائے گی۔ ہمیں جونا گڑھ کی آزادی کے لیے کسی سہارے کی ضرورت نہیں ، جونا گڑھ کی عوام ہی اس کے لیے کافی ہے۔ کراچی شہر میں قتل و غارت گری بھارت کروا رہا ہے۔ جب ہندوستان کے ساتھ جہاد کریں گے تو کراچی میں بھی امن خودبخود ہو جائے گا۔ محمد حسین محنتی نے کہا کہ جونا گڑھ ریاست نے پاکستان کا ہر مشکل میں ساتھ دیا ہے۔ حکومت بھارتی دباﺅ کے تحت آج تک جونا گڑھ کا مسئلہ اجاگر نہیں کر سکی۔ ہندوستان پاکستان میں کھلی جارحیت کا مرتکب ہو کر حملے کر رہا ہے جبکہ دوسری جانب امن کی آشا کا ڈھونگ رچایا جا رہا ہے۔آج ضرورت اس امر کی ہے کہ آپس میں اتحاد و اتفاق پیدا کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ہم گورنمنٹ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ جونا گڑھ کے مسئلے پر ہندوستان سے واضح مذاکرات کرے۔ تعلیمی اداروں میں جونا گڑھ کے طلبہ کے لیے مخصوص نشستیں مختص کی جائیں۔ حاجی حنیف طیب نے اپنے خطاب میں کہا کہ جونا گڑھ نے پاکستان سے الحاق کا فیصلہ کر کے بہت عظیم قربانی دی ہے ہمارا المیہ یہ ہے کہ پڑھے لکھے افراد جونا گڑھ کے بارے میں کچھ نہیں جانتے۔ تعلیمی اداروں میں کوئی خاص مضامین نہیں رکھے گئے جو کہ قابل افسوس بات ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ جونا گڑھ کے لیے ایک میوزیم بنایا جائے جہاں پر جوناگڑھ سے متعلق چیزوں کو جگہ دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے لیے جدوجہد جاری ہے جس کے نتائج بہت جلد سامنے آئیں گے۔ طارق محمود نے کہا کہ انسانی حقوق کی عالمی اداروں کو جونا گڑھ پر بھارت کا غاصبانہ قبضہ کیوں نظر نہیں آتا۔ جونا گڑھ فیڈریشن کی تحریک نے بھارت کے ایوانوں میں لرزہ پیدا کر دیا ہے۔ پاکستان بنانے والوں کو پاکستان بچانا ہو گا۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s